March 2008


تیرے دن اور میری راتیں
ہمارے جیون بدل رہے ہیں
تیرے سپنے ، میرے سپنے
ہمارے سپنوں میں ڈھل رہے ہیں

Translation

Your days and my nights
transformed into our life
Your dreams and my dreams
turned into our dreams

March 14…It is exactly one year now since I started this blog. I have enjoyed it all the way…writing, reading comments and responding to them. After contributing almost one poem / story a week , I think I should take a break for couple of weeks …. thanks to all who appreciate my work…and those who don’t…well they don’t have any reason to come here 😀 …

Allah be with everyone of us…

my time starts now 😀

نہیں تھا کہیں میں اس جہاں میں
مگر پھر بھی تیرے خیالوں میں تھا میں
تیری تمنّا ، دعا بن گیا تھا
سیاہ شب، دن کے اُجالوں میں تھا میں

محبّت سے سینچا، محنت سے پالا
مجھے اُس جہاں سے دنیا میں لائی
آنکھیں جو کھولیں تجھے ہی تو پایا
تصویر آنکھوں نے تیری بنائی

آواز ہونٹوں سے پہلی جو نکلی
تو سارے جہاں میں تجھے ہی پکارا
پہلا قدم جو اٹھانے چلا میں
تو اُنگلی پکڑ کر بنی تو سہارا

لفظوں سے جب کھیلنے کو چلا میں
تو اللہ کہنا تو نے سکھایا
مخلوق میں، وہ خالق ہے سب کا
نہیں جانتا تھا، یہ تو نے بتایا

منزل بہ منزل ، قدم در قدم
جیون کی راہوں پہ چلنا سکھایا
کامیابیوں پر خوش بھی ہوئی تو
ناکامی پر حوصلہ ہے بڑھایا

منزل کو سر کرنے جب بھی چلا میں
اتاریں نظر سے ساری بلائیں
خوشی پہ میری، میرے ماتھے کو چوما
غم میں میرے مانگی راتوں دعائیں

جہاں سے بھی گزروں جہاں پر بھی جاؤں
تیرے پیار کی مجھ کو عادت رہے گی
مجھے روز تیری ضرورت رہی ہے
مجھے روز تیری ضرورت رہی گی

یہ دنیا خوبصورت ہے“ سے ”

Translation

I did not exist anywhere in this world
yet I existed in your thoughts
I had become a dream , a prayer
in the black night and bright day lights

You nourished me with love, hardship
You brought me from the other world to this world
When I opened my eyes I found only you
My eyes preserved image of you

When first sound came out of my lips
In whole of the world I called only you
When I took my first step
You held my finger to make me stable

When I started playing with words
You taught me to call ‘Allah’
I am HIS creation and HE is creator of all
I did not know, You told me that

Goal by goal, step by step
You taught me to walk through the life
You became happy with my success
and encouraged me on my failures

Whenever I started my journeys
Just by looking , you removed all evil eyes
You kissed my forehead when I became happy
and prayed all nights when I was sad

Whatever I do, wherever I go
I am used to your love
I needed you daily in my life
I will need you everyday for rest of my life

– fromYeh Dunya Khubsoorat HaiCopyrights Reserved