یہ سورج کیوں نکلتا ہے
گہرے بادلوں کے درمیاں
یہ سورج کیوں نکلتا ہے

اک خاموش بچے کو
پھر سے رلانے کو
تھکے ہارے ہوئے انسان کو
پھر سے جگانے کو
کئی معصوم لوگوں کو
غلط راہیں دکھانے کو
امیدیں رہ گئی تھیں جو
انہیں پھر سے گنوانے کو
یہ سورج کیوں نکلتا ہے

میرے خوابوں کو مجھ سے چھین کر
تم تو چلے جاتے
نہ ہوتی جو یہ شب کی سیاہی
ہم تو مر جاتے
ادھورے خواب، بہت سی ناامیدیں
چھوڑ جاتے ہو
سکوں جب آنے لگتا ہے
اسے پھر توڑ جاتے ہو

میری ان ناامیدوں کو بدلنے
اب نہیں آنا
کرن پل بھر کی میرے لئے
اب تم نہیں لانا
اے سورج اب اگر جاؤ
نہ واپس لوٹ کر آنا
اے سورج اب نہیں آنا

کھو نہ جانا“ سے “

Translation

Why does this sun rise
from the dark clouds
why does this sun rise

To make a peaceful child
cry again
To wake up
a dead tired man again
To show wrong paths
to many innocents
To make them lose
the hopes again
why does this sun rise

You strip me of my dreams
and go away
If it were not for dark nights
I would be dead
You leave
incomplete dreams and disappointments
When I start to be peaceful
you break it again

To change my disappointments
do not come again
Do not bring for me
a momentary ray of hope again
O sun if you go now
do not come back
O sun do not come again

from ” Kho na JanaCopyrights Reserved

Advertisements